تلہ گنگ(نامہ نگار) سعودیہ ، ابوظہبی ، اور دبئی کام کی غرض سے ہرگز نہ جائیں ، حالات خراب ہیں۔یہاں تنخواہ اور بتائی جاتی ہے اور وہاں اور ہوتی ہے۔ ایجنٹ لاکھوں روپے کماکر غائب ہو جاتے ہیں جبکہ غریبوں کا زندگی بھر کا سرمایا منٹوں میں ختم ہوجاتا ہے، ادارہ آپ سب کو آگاہ کرتا ہے  کہ کم کھائیں مگر اپنے ملک میں کھائیں اور اللہ کا شکر ادا کریںاور کسی بھی صورت لالچ میں آکر اپنا قیمتی وقت اور پیسہ ضائع نہ کریں۔ اگرآپ کو ہماری نصیت اچھی نہیں لگتی تو آپ ضرورت جائیں ، تاہم ایجنٹ سے سے صرف یہ کہے دیں کہ جب تک تمھارے پیسے پورے نہیں ہوں گے ہم تنخواہ گھر والے کو دینے کے بجائے آپ کو دیں گے ، فی الحال پاس سے پیسے لگائیں اور ویزہ منگوائیں۔ اگر ایجنٹ کو یقین ہوگا کہ وہاں تنخواہ پچاس ہزار ہے تو وہ آپ کو شرط پر ویزہ فری دے گا دوسری صورت میں غائب ہو جائے گا،آ پ کو بھی تسلی ہو جائے گی۔

ایک تبصرہ شائع کریں

 
Top